آپ کی جیب میں موجود وہ چیز جو ٹوائلٹ کے کموڈ سے بھی 7 گنا زیادہ گندی ہے

2018 ,دسمبر 1



ایڈنبرا(مانیٹرنگ رپورٹ) کسی سے پوچھ لیں کہ گھر میں سب سے گندی جگہ کون سی ہوتی ہے تو وہ فوراً بتائے گا کہ ٹوائلٹ کا کموڈ۔ لیکن اب سائنسدانوں نے بظاہر صاف ستھرے اور چمکتے دمکتے موبائل فونز کے بارے میں ایسا ہولناک انکشاف کر دیا ہے کہ سن کر آپ کے ہاتھ سے فون گر جائے گا۔ میل آن لائن کے مطابق نئی تحقیق میں ماہرین نے بتایا ہے کہ موبائل فون، جو آج ہر انسان کی جیب میں موجود ہے، ٹوائلٹ کے کموڈ سے 7گنا زیادہ گندہ ہوتا ہے۔

    یہ تحقیق سکاٹ لینڈ کی یونیورسٹی آف ابرڈین کے سائنسدانوں نے کی ہے۔ انہوں نے درجنوں موبائل فونز اور کموڈز کے سکین کیے اور ان پر موجود بیکٹیریا کی تعداد کا موازنہ کیا۔ نتائج میں انہوں نے بتایا کہ ”کموڈز پر اوسطاً220بیکٹیریا پائے گئے جبکہ موبائل فونز پر اوسطاً1479بیکٹیریا موجود تھے۔“ تحقیقاتی ٹیم کے سربراہ اور بیکٹیریالوجی کے پروفیسر ہف پیننگٹن کا کہنا تھا کہ ”اس تحقیق کے نتائج ہمارے لیے بھی ہوشربا تھے، جس میں ثابت ہوا کہ موبائل فونز کی سکرین پر انگلیاں پھیرنا کموڈ کو ہاتھ لگانے سے 7گنا زیادہ خطرناک ہوتا ہے، حالانکہ اس تحقیق میں جن فونز کے سکین کیے گئے وہ بظاہر بالکل صاف ستھرے تھے۔“

    ہف پیننگٹن کا مزید کہنا تھا کہ ”فونز پر جو بیکٹیریا پائے گئے ان میں ای کولی (E.coli)جیسے خطرناک بیکٹیریا بھی تھے جو فوڈ پوائزننگ وغیرہ کا سبب بنتے ہیں۔اگرچہ یہ نصیحت اچھی نہیں سمجھی جائے گی لیکن میں کہوں گا کہ دوسروں کو اپنے فون کو ہاتھ مت لگانے دیا کریں اور خود بھی نہ صرف موبائل فون کو ٹوائلٹ میں ساتھ لیجانے سے گریز کریں بلکہ ٹوائلٹ استعمال کرنے کے بعد اچھی طرح ہاتھ صاف کرنے کے بعد ہی فون کو ہاتھ لگایا کریں۔“

    متعلقہ خبریں