اغوا ہوئی لڑکی کہا تھی اور کس حال میں تھی۔ اس کے ساتھ کیا شرمناک کام کیا جاتا تھا؟رونگٹے کھڑے کر دینے والی تفصیلات سامنے آگئیں

2017 ,جون 11



نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی ریاست کیلیفورنیا میں ایک لڑکا لڑکی لاپتہ ہوگئے۔ پولیس دو ماہ کی تگ و دو کے بعد لڑکی کو سپارٹنبرگ کاﺅنٹی میں مضافاتی علاقے سے بازیاب کرانے میں کامیاب ہو گئی جہاں اغواءکار نے اسے ایک کنٹینر میں زنجیر سے باندھ رکھا تھا۔ جب پولیس نے اس شخص کو گرفتار کیا جس کی زمین پر یہ کنٹینر موجود تھا تو ایسا انکشاف ہو گیا کہ پولیس افسران بھی وحشت زدہ رہ گئے۔  30سالہ کیلہ براﺅن نامی لڑکی اور اس کا 32سالہ بوائے فرینڈ لاپتہ ہوئے تو پولیس 2ماہ تک ان کا سراغ لگانے کی کوشش کرتی رہی۔ بالآخر اسی کوشش میں ایک روز پولیس مذکورہ کاﺅنٹی میں کنٹینر کے پاس پہنچی تو آفیسرز کو اندر سے کسی کی چیخ و پکار سنائی دی۔ اس پر وہ نے کنٹینر کے لاک کاٹ کر اندر داخل ہوئے تو یہ دیکھ کر دنگ رہ گئے کہ اندر لاپتہ ہونے والی لڑکی کیلہ براﺅن موجود تھی جس کی گردن میں جانوروں کی طرح زنجیر ڈال کر اسے باندھا گیا تھا۔

رپورٹ کے مطابق یہ زمین ٹوڈ کوہلپ نامی شخص کی تھی جس نے براﺅن اور اس کے بوائے فرینڈ کو اغواءکیا تھا۔ پولیس نے ٹوڈ کو گرفتارکرکے تفتیش کی تومعلوم ہوا کہ وہ ایک سیریل کلر تھا جو گزشتہ 13سال میں 7لوگوں کو موت کے گھاٹ اتار چکا تھا۔ کیلہ براﺅن کے بوائے فرینڈ کو بھی اس نے قتل کر دیا تھا جبکہ کیلہ کو جنسی غلام بنا کر اس نے کنٹینر میں قید کر رکھا تھا۔ ٹوڈ نے اعتراف کیا کہ وہ اب تک 30سالہ سکاٹ پونڈر، 52سالہ بیورلے گے، 30سالہ بریان لوکس، 26سالہ کرس شربرٹ،29سالہ جانی جوئی کوکزی اور 26سالہ میگن لی مک کرا کوکزی کو بھی قتل کر چکا ہے۔ ملزم نے بتایا کہ ”وہ مردوں کو فوراً قتل کر دیتا جبکہ خواتین کو جنسی غلام بنا لیتا اور کچھ عرصہ بعد انہیں بھی قتل کر دیتا تھا۔“ان تمام لوگوں کو مجرم نے اپنی اسی پراپرٹی پر اغواءکے بعد قتل کیا اور خواتین کو اسی کنٹینر میں وہ قید رکھتا تھا۔ گزشتہ دنوں تمام جرائم ثابت ہونے پر عدالت کی طرف سے ٹوڈ کوہلپ کو مسلسل 7بار عمر قید اوراضافی 60سال قید کی سزا سنا دی گئی ہے۔

متعلقہ خبریں