شادی کی تقریب سے نشے میں دھت ہو کر واپس آنے والے چچا نے5 سالہ بچی کی عزت تار تار کر دی،

2017 ,مئی 24



نئی دہلی (مانیٹرنگ ڈیسک) خواتین کیساتھ زیادتی کے واقعات تو معمول بن کر رہ گئے ہیں اور آئے روز ایسے کئی واقعات سامنے آتے ہیں مگر اب بھارتی ریاست مہاراشٹرا کے شہر ناشک میں ایسا دلدوز واقعہ پیش آیا ہے کہ یوں محسوس ہوتا ہے جیسے ’انسانیت ہی مر گئی ہے۔‘بھارتی میڈیا کے مطابق ایک 26 سالہ مزدور ”سچن شندے“ کو ناشک پویس نے گرفتار کیا جو اتوار کے روز ایک شادی کی تقریب سے نشے میں دھت ہو کر واپس آیا اور مبینہ طو رپر اپنی پانچ سالہ بھتیجی کو زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔ لیکن اس کے بعد بچی کی دادی نے ایسا کام کیا کہ شیطان بھی چیخ اٹھا ہو گا۔ مزدور کی ماں ”انوسایا شندے“ کو بھی گرفتار کر لیا گیا ہے کیونکہ اس نے اپنے بیٹے کو پولیس سے بچانے کیلئے پوتی کا گلا دبا کر اسے موت کے گھاٹ ہی اتار دیا۔ 
جس کے علم میں بھی یہ واقعہ آیا ہے وہ اسے ہضم نہیں کر پا رہا کہ ایک پانچ سالہ معصوم بچی اپنے ہی گھر میں اپنے ہی چچا کے ہاتھوں انسانیت سوز درندگی کا شکار ہو گئی اور پھر وحشت ناک طریقے سے موت کے گھاٹ اتار دی گئی۔ 
مقامی پولیس کے مطابق انوسایا شندے نے بچی کی لاش کو ایک سکول کے پیچھے پھینک دیا اور پھر خود ہی ایک منصوبہ بندی کے ساتھ اپنے دوست کے ساتھ مل کر اس کی تلاش بھی شروع کی اور پولیس سٹیشن میں جھوٹا مقدمہ درج کرا دیا کہ بچی کو نامعلوم افراد نے اغواءکر کے زیادتی کا نشانہ بنایا اور پھر اسے قتل کر دیا۔ 
پولیس کے مطابق سچن شندے جب شادی کی تقریب سے واپس آیا تو اس کی بھتیجی اپنی دادی کے ساتھ سو رہی تھی، وہ اسے اٹھا کر دوسرے کمرے میں لے گیا اور پھر زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔ اس تمام تر کارروائی کے دوران بچی کی ماں گھر میں موجود نہ تھی اور اسے کسی بھی بات کا علم نہ ہو سکا لیکن جب ساری بات پتہ چلی تو بے چاری کی دنیا ہی اندھیر ہو گئی۔ 
انوسایا نے لڑکی کی لاش کو پھینکنے کے بعد پولیس سٹیشن میں مقدمہ درج کرایا کہ اس کی پوتی کو گھر سے اغواءکر کے زیڈ پی پرائمری سکول کے پیچھے زیادتی کا نشانہ بنا کر قتل کر دیا گیا۔ پویس نے دادی کی شکایت پر نامعلوم قاتلوں کے خلاف بچوں کے خلاف جنسی ہراسگی ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کر کے اس کی تلاش شروع کر دی۔ابتدائی تحقیقات کے دوران جب پولیس والوں نے لڑکی کی لاش ڈھونڈی تو وہ سراغ لگاتے ہوئے شندے کے گھر جا پہنچے اور شک گزرنے پر جب ماں، بیٹے سے تحقیقات کی گئیں تو دونوں نے اپنے جرم کا اعتراف بھی کر لیا۔ وانی پولیس سٹیشن کے انچارج ایم ایل پاوار کے مطابق ملزموں کے اعتراف کے بعد سچن شندے کے خلاف انڈین پینل کوڈ کے سیکشن 376 اور اس سے متعلقہ سیکشنز کے تحت مقدمہ درج ک رلیا گیا ہے جبکہ اس کی ماں کے خلاف قتل کا مقدمہ درج کر لیا گیا ہے۔

متعلقہ خبریں