شادی کی پہلی رات ہی شوہر نے جنسی زیادتی کر ڈالی۔۔۔اور پھر ایسا تشدد کیا کہ جان کر آپ کے رونگٹے بھی کھڑے ہو جائیں گے

2017 ,فروری 27



کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) شادی کا موقع ہر کسی کیلئے یادگار ہوتاہے لیکن ایک پاکستانی لڑکی کیلئے یہ موقع نہایت ہی بھیانک ثابت ہوا کیونکہ اس کے شوہر نے اس کی گردن ہی توڑ دی اور اس سزا کی وجہ بھی ایسی تھی کہ جس پر اس بے چاری نوبیاہتا دلہن کا کنٹرول نہیں تھا ۔ خاتون نے ایام مخصوصہ کی وجہ سے مرد سے تعلق کام کرنے سے انکار کردیاتھا۔ نیوزویب سائٹ’پڑھ لو‘ نے عباسی شہید ہسپتال کے ایک ٹرینی اور میڈیکل سٹوڈنٹ کے حوالے سے بتایاکہ ’ گزشتہ ہفتے اس کی ریڈیالوجی ڈیپارٹمنٹ میں ایک لڑکی سے ملاقات ہوئی، اس کے ہاتھ مہندی سے سرخ تھے، اس کا چہرہ نئی نویلی دلہن کی طرح میک اپ سے بھرا ہوا تھاجبکہ زلفیں بھی نہایت خوش اسلوبی سے سنواری گئی تھیں، اس کاچہرہ زخمی اور ہونٹ ، کان ، ہاتھ اور گالوں پر خراشیں تھیں، ٹانگوں پر خشک خون کے دھبے اور آنکھیں نمناک تھیں اور اس کیساتھ وہاں ایک مرد کھڑا تھا۔ دیگر لوگوں کی طرح میں نے بھی استفسار کیاتومرد نے بتایاکہ لڑکی کیساتھ کچھ نہیں ہوا، اس کے خاوند اور خاتون کے درمیان کچھ معمولی سا گھریلو مسئلہ تھا۔ مرد کے بارے میں مزید پوچھنے پر اس نے بتایاکہ وہ میرابھائی تھاتاہم مرد کی طرف سے واضح جواب نہ ملنے پر خاتون سے پوچھا تو اس کا جواب سن کر سب دنگ رہ گئے ۔ لڑکی نے آنسوﺅں کے سمندر میں ڈوبی آنکھوں کیساتھ بتایاکہ میرے خاوند نے میراریپ کیا اور پھر بہت پیٹا، دوبارہ پوچھنے پر لڑکی نے ہاں میں سرہلایااور بتایاکہ ’ میری گزشتہ رات شادی ہوئی، یہ ہماری پہلی رات تھی اور میرے خاوند نے قربت کے لمحات کا مطالبہ کیا ، میں نے بتایاکہ میری طبیعت ٹھیک نہیں، ایام مخصوصہ ہیں تواس نے بولا کہ مجھے اس سے غرض نہیں ، مزاحمت پر وہ آگ بگولاہوگیا پیٹناشروع کردیا، ریپ کیا اور پھرلاتوں گھوسوں سے پٹائی شروع کردی حتیٰ کہ بیلٹ نکال لی، میں نے چیخنا چلاناشروع کردیااور اس ایسانہ کرنے کی بھیک مانگتی رہی لیکن اس کے کان پر جوں تک نہ رینگی ، اس کے بعد اس نے مجھے زور سے دھکا دیا اور میری گردن کمرے میں کسی چیز سے جاٹکرائی جس کی وجہ سے میری گردن کی ہڈی (کالربون) ٹوٹ گئی۔ٹرینی ڈاکٹر نے بتایاکہ رپورٹس چیک کرنے پر معلوم ہواکہ اس کی ہڈی ٹوٹ چکی ہے ، اس کے چہرے پر غصے کے آثار نمایاں تھے اور وہ درد سے کراہ رہی تھی ۔ روتے ہوئے لڑکی نے اپنے بھائی پر چلانا شروع کردیاکہ ’تم لوگوں نے ایسے مرد سے میرا نکاح کیوں کروایا؟‘میں نے اسے پرسکون رکھنے کی کوشش کرتے ہوئے کہاکہ اپنے خاوند کیخلاف درخواست دیںلیکن اسی دوران اس کے بھائی نے مداخلت کرتے ہوئے اس سے استفسار کیا کہ کیا اس نے اپنے خاوند کی بات مانی تھی جس پر لڑکی نے ’ناں‘ میں جواب دیا جس پر اس نے کہاکہ اگر مان جاتی تو ایسا کبھی نہ ہوتا۔ اس کے بھائی کے اس بیان پر میں دنگ رہ گیااور غصہ بھی آیا ، میں نے اسے بتایاکہ مرد کو یہ اختیار نہیں کہ وہ اپنی اہلیہ کی مرضی کے بغیرکچھ کرے اور اسلام بھی ایسی اجازت نہیں جبکہ یہ بھی واضح کردیاگیاکہ مخصوص ایام کے دوران اپنی اہلیہ سے قربت نقصان دہ ہے ۔ یہ وضاحت ملنے کے بعد بھی لڑکی کے بھائی کاکہناتھاکہ ’ ایسا کچھ نہیں ہوتا، کسی اورعورت کا ریپ تھوڑی کیا ہے؟اس کی بیوی ہے‘۔اور وہ جو چاہے اس کے ساتھ کر سکتا ہے۔۔اسے منع نہیں کرنا چائیے تھا۔

متعلقہ خبریں