گاڑی کی ٹکر پر شیریں مزاری گورنر خیبر پی کے سے الجھ پڑیں

2017 ,جون 3



لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک): سیاسی گرما گرمی اب پارلیمنٹ سے باہر بھی اپنے جلوے دکھانے لگی ہے۔ گزشتہ روز پارلیمنٹ کے باہر گورنر خیبر پی کے اور پی ٹی آئی کی شیریں مزاری کے درمیان ہونے والی توتکار اسی گرمی کا ہی نتیجہ لگتی ہے۔ شنید ہے کہ گورنر خیبر پی کے ظفر اقبال جھگڑا کی پروٹوکول گاڑی شیریں مزاری کی گاڑی سے ٹکرا گئی۔ اب اگر ماحول خوشگوار ہوتا تو دونوں باہر نکل کر ہنستے مسکراتے پھول برساتے ایک دوسرے سے معذرت کرتے اور یوں یہ معاملہ خوش اسلوبی سے طے ہو جاتا۔ مگر یہاں چونکہ دشمنی چل رہی ہے۔ اس لئے شیریں مزاری گاڑی سے نکل کر جھپٹ پڑیں۔ اب جھگڑا صاحب کا نام تو خاصہ جھگڑالو قسم کا ہے مگر اطلاع ہے انہوں نے قدرے تحمل سے جوابی کارروائی کے طور پر ہلکی بمباری پر ہی گزارہ کیا۔ شیریں مزاری ذرا ویسے ہی تیز مزاج ہیں۔ انہوں نے خوب ہلہ گلہ کیا۔ تو صاحبو! اب ان دونوں کو کوئی سمجھاتا کہ سیاست اپنی جگہ، اخلاقیات اپنی جگہ۔ اگر رہنما ہی برداشت چھوڑ دیں گے، لڑنے بھڑنے پر تل جائیں گے تو اس کا عوام پر کیا اثر ہو گا۔ بے شک جون میں موسم بھی گرم ہے۔ سیاسی درجہ حرارت بھی بڑھ رہا ہے۔ ادھر سے رمضان المبارک بھی ہے۔ ان حالات میں سیاستدانوں کو سر پر برف رکھ کر سوچنا اور بولنا ہو گا تاکہ معاملات ہاتھ سے نہ نکل جائیں کم از کم اپنی تاریخ سے تو ان سیاستدانوں کو آگاہ ہونا چاہئے کیا یہ سب 5جولائی بھول گئے ہیں۔

متعلقہ خبریں