غربت کا رونا‘ شوہر سے جھگڑے: مسیحی ماں نے گڈ فرائیڈے پر 2 بچوں کو گلے گھونٹ کا مار دیا‘ خود پھانسی لے لی

2017 ,اپریل 15



لا ہور (مانیترنگ) شاد با غ کے علا قہ میں مسیحی خاتون نے خاوند سے آئے روز جھگڑوں پر گڈ فرائیڈے کے روز دو کمسن بچو ں کو پا نی کی بالٹی میں غوطے دیئے اور گلے دبا کر موت کے گھاٹ اتارنے کے بعد بلیڈ سے اپنی کلائیاں کاٹ لیں اور گلے میں پھندا لیکر خودکشی کرلی۔کوٹ خواجہ سعید‘ عیسیٰ نگر ی میں 30سا لہ کر ن کی 5سا ل قبل سا ئم مسیح کے ساتھ شادی ہوئی تھی۔ دونوں کے دو بچے 4سا لہ میتھیو مسیح اور10ماہ کی بیٹی ایمان تھے۔ صائم مسیح گلبرگ کے ایک ریسٹورنٹ میں ملازمت کرتا ہے۔دونوں میاں بیوی کے درمیان گھریلو اخراجات پورے نہ ہونے اور غربت کے باعث اکثر جھگڑا رہتا تھا گزشتہ روز بھی جھگڑ ا ہوا ۔ جس کے بعد صائم مسیح حسب معمو ل ریسٹورنٹ کام کیلئے چلا گیا جبکہ کرن نے کمرے میں پانی سے بھری بالٹی رکھ کر پہلے دونو ں بچو ں پر تشد د کیا،بچی ایمان کی ٹانگ پر بلیڈ سے کٹ لگایا جس کے بعد دونوں بچوں کو پا نی بھری بالٹی میں ڈبو کر غوطے دئیے اور گلے دبا کرقتل کر دیا ۔اس کے بعد بلیڈ سے اپنے دونوں ہاتھوں کی کلائیوں کی نسیں کاٹ لیں اور پنکھے سے دوپٹہ لٹکا کر پھانسی لے لی۔ اطلا ع ملنے پر پولیس کی بھاری نفری موقع پر پہنچ گئی اور نعشیں قبضے میں لے کر پوسٹ مارٹم کے لئے مر دہ خانے جمع کرا دیں ۔ اطلاع ملنے پر صا ئم بھی گھر پہنچ گیا اور دھاڑیں مار کر روتا رہا۔ اس دلخراش واقعہ کی اطلاع ملتے ہی لوگوں کی بڑی تعداد موقع پر جمع ہو گئی جبکہ رشتے دار بھی روتے پیٹتے وہاں پہنچ گئے۔ علاقہ میں سوگ کا سماں تھا۔

 

متعلقہ خبریں