ڈزنی کی پرنسز 'فروزن'

2016 ,نومبر 25



واشنگٹن (شفق ڈیسک) والٹ ڈزنی اینیمیشن اسٹوڈیو نے اپنی نئی پولی نیشن پرنسسز موانا کو متعارف کرادیا ہے جو ایک اینیمیٹڈ فلم ہے جس میں ایک مہم جو لڑکی کو دکھایا گیا ہے جو اپنے پیاروں کو بچانے اور اپنی شناخت کی تلاش میں سمندر کے سفر پر نکلتی ہے۔ اس سفر کے دوران موانا کی ملاقات مایوئی سے ہوتی ہے جو راستہ تلاش کرنے کی مہارت کے حوالے سے اس کی رہنمائی کرتا ہے۔ یہ دونوں اکھٹے مل کر سمندر میں سفر کرتے ہیں جہاں ان کا سامنا عفریتوں اور دیگر مصائب سے ہوتا ہے۔ ڈائریکٹر رون کلیمنٹس اور جان مسکر کی اس نئی فلم میں مرکزی کرداروں کی آوازوں کے لیے ڈیوائن جانسن (دی راک) اور Auli'i Cravalho کی مدد لی گئی۔ یہ فلم 25 نومبر کو ریلیز ہورہی ہے، ہوسکتا ہے کچھ ناقدین کے خیال میں یہ ڈزنی کی اب تک سب سے زیادہ بزنس کرنے والی اینیمیٹڈ فلم فروزن (2013) کا ریکارڈ توڑنے میں کامیاب ہوسکتی ہے۔ موانا کے اندر ایک شہزادی کی کشش اور جنگجو کا دل ہے، ایک طرف مایوئی کی کشتی رانی چہروں پر مسکراہٹ بکھیرتی ہے وہیں دوسری جانب موانا آپ کی دلچسپی کو برقرار رکھتی ہے۔ موانا ڈزنی کے بہترین کام کی نمائندگی کرتی ہے، ایک ایسا ایڈونچر جو کہ جدید ترین سی جی اینیمیشن کے ساتھ ساتھ روایتی کہانی اور رنگا رنگ کرداروں سے بھرپور ہے، یہاں تک کہ کرداروں کی آوازوں کا انتخاب بھی کمال کا ہے، درحقیقت یہ ٹروپیکل فروزن ہے جو کہ اسی طرح ہر شعبہ زندگی کے لوگوں کو بھا سکتی ہے۔ ڈزنی کی اینیمیٹڈ موانا کی ہیروئین سمندر کی تازہ ہوا کا جھونکا ہے، کوئی بھی پرنسز یا کردار اس جیسا نہیں، اگر وہ پرنسز کی جگہ ملاح بھی ہوتی تو کیا ہوتا؟ وہ پھر بھی دلوں پر حکمران ہی ہوتی۔انٹرٹینمنٹ ویکلی موانا نہ صرف ڈزنی کے پسندیدہ ترین کلاسیک اینیمیٹڈ کرداروں کا بہترین متبادل ہے، بلکہ یہ 2016ء میں اس شعبے کو آگے بڑھانے کا کام بھی کرے گی یعنی ایک سمارٹ، پرتنوع اور ایسی قائل کردینے والی ہیروئین جو کہ عفریتوں اور ذاتی شبہات کے خلاف جدوجہد کرتی ہے۔ اس فلم میں ڈزنی کے روایتی کرداروں جیسے کردار تو موجود ہیں مگر اس کی ہیروئین نئی، اسمارٹ اور دلوں پر چھا جانے والی پرنسز ہے۔ ٹینگلڈ سے بھی زیادہ، فروزن سے بھی زیادہ، موانا ڈزنی کی اینیمیٹڈ فلموں پر حکمرانی کی روایت کو برقرار رکھتی ہے، اس میں ایک جدید رنگ بھی دیا گیا ہے، یہ پہلی بار ہے کہ پرنسز کو محبت سے آزاد دکھایا گیا ہے، سمندری ایڈونچر پر مبنی یہ جادو اثر فلم ہے۔ موانا جانتی ہے کہ کونسی چیزیں آپ کے بچے دیکھنا اور سننا چاہتے ہیں اور یہی وجہ ہے کہ فلم میں قدیم لوک معلومات کو ڈیجیٹل انداز سے منتقل کیا گیا ہے، تاہم یہ ڈزنی کے اعلیٰ معیار کا مظہر نہیں جو فروزن میں نظر آتا ہے۔

متعلقہ خبریں