"عورت تمھاری کھیتی ہے"

2019 ,اکتوبر 14



قرآن میں اللہ فرماتا ہے"عورت تمھاری کھیتی ہے" اگر مرد صرف ان چار لفظوں پر ہی عمل کرلے تو دنیا جنت بن جائے، کیا آپ نے کبھی ایسا ہوتے دیکھا ہے کہ کاشتکار نے کچھ بھی نہ کیا ہو اور خود بہ خود فصل بن جائے،، طاہر ہے ایسا ممکن نہیں تو پھر ایک شوہر یہ کیسے سوچ لیتا ہے کہ وہ اپنی بیوی کو بالکل بھی توجہ نہ دے اور پھر بھی وہ اس کو خوش رکھے، اس کی خدمت کرے،

ایک صحابی رضی اللہ عنہ نے نبی کریم ؐ سے پوچھا کہ عورت پر سب سے زیادہ حق کس کا ہے تو پیارے نبیؐ نے فرمایا کہ عورت ہر سب سے زیادہ حق اس کے شوہر کا ہے

لیکن آج کے معاشرے میں شوہر اپنی بیوی کو بالکل بھی توجہ نہیں دیتا، ایک لڑکی کو جب ایک مرد نکاح کرکے لاتا ہے تو یہ اس کی ذمہ داری ہے کہ وہ اپنی بیوی کو سمجھے اس کو جانے کہ اسے کیا پسند ہے اسے کس بات سے خوشی اور راحت ملتی ہے جیسے ایک کاشتکار کو پتہ ہوتا ہے زمین کب کاشت کرنی ہے کب بیج ڈالنا ہے اور کب پانی دینا ہے،

بیوی پر توجہ دینا شوہر کا حق ہے اور ایسے لوگوں کو جو اپنی بیوی کا خیال رکھتے ہیں اور اپنے نبیؐ کی سنت پر عمل کرتے ہیں ان کو زن مرید کہنے والے بیوقوف لوگ ہیں کیونکہ اللہ کے نبی ؐ نے کہا کہ سب سے بہترین مسلمان وہ ہے جو اپنی بیوی سے اچھا سلوک کرے اور آج کے دور میں ایسے لوگ بہت کم ہیں۔

متعلقہ خبریں