نوجوان لڑکی نے اپنے جسم کے اس نازک حصے پر ٹیٹو بنوا لیا جہاں دنیا کی تاریخ میں کسی نے نہ بنوایا،جان کر آپ بھی توبہ پر مجبور ہوجائیں گے

2017 ,مئی 3



لندن (مانیٹرنگ ڈیسک) جسم پر نقش و نگار، جنہیں ٹیٹو کہا جاتا ہے، بنوانا مغربی ممالک میں ایک مقبول فیشن کی صورت اختیار کرچکا ہے اور ہمارے ہاں بھی اس کے شوقین بڑھتے جارہے ہیں۔ا گرچہ ٹیٹو جسم کے کسی بھی حصے پر ہوسکتے ہیں لیکن حال ہی میں برطانوی پولیس نے ایک جرائم پیشہ دوشیزہ کو پکڑا تو اس کے جسم کے ایسے حصے پر ٹیٹو نظر آگیا کہ پولیس والے بھی دیکھ کر کانپ گئے۔ 24 سالہ مورگن چوائس وارن کو اغوا، مسلح ڈکیتی کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا۔ اس نے ایک شخص سے اسلحے کے زور پر موبائل فون اور پرس چھینا تھا۔ پولیس والوں نے جب اس خاتون کو پکڑا تو یہ دیکھ کر حیران رہ گئے کہ اس کا سارا جسم ٹیٹوز سے بھرا ہوا تھا۔ اس کے بائیں گال پر دل کا نقش بنا ہوا ہے اور گردن پر بھی پھولوں کے نقوش بنے ہوئے ہیں۔ بائیں آنکھ کے او پر بھی کوئی تحریر لکھی ہوئی ہے جبکہ ماتھابھی نقش و نگار سے خالی نہیں ہے، مگر ان سب سے زیادہ حیرتناک چیز اس کی آنکھ کے ڈیلے پر بنے ٹیٹو ہیں۔پولیس نے جب اس خاتون کی تصویر انٹرنیٹ پر شیئر کی تو یہ دیکھتے ہی دیکھتے پوری دنیا میں پھیل گئی۔ انٹرنیٹ صارفین اس بات پر حیرت زدہ ہیں کہ کوئی اپنی آنکھ کے اندر بھی ٹیٹو بنواسکتا ہے۔ مورگن کو گرفتار کرنے والے پولیس اہلکاروں کا بھی کہنا ہے کہ انہوں نے پہلے کبھی ایسی مثال نہیں دیکھی۔ لیکن لڑکی نے اپنی اس حرکت سے بہت سے لوگوں کو سوچ میں ڈال دیا ہے۔

متعلقہ خبریں