حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ

حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ

جب سيدنا عمر رضى اللہ عنہ كو ابولؤلؤ فيروز مجوسى نے نيزہ مارا تو آپ رض كو دودھ پلايا گيا جو پسليوں كى طرف سے نكل گيا۔ طبيب نے كہا: اے امير المؤمنين! وصيت كر ديجيے اسليے كہ آپ مزيد زندہ نہيں رہ سكتے۔ سيدنا عمر رضى اللہ عنہ نے اپنے بيٹے عبداللہ كو بلايا اور كہا:

حضرت علی احمد صابر کلئیری رحمتہ اللہ علیہ

حضرت علی احمد صابر کلئیری رحمتہ اللہ علیہ

حضرت علی احمد صابر کلئیری رحمتہ اللہ علیہ نے حضرت شمس الدین ترک پانی پتی رحمتہ اللہ علیہ کو طلب فرمایا اور جب وہ حاضر خدمت ہوئے تو آپ رحمتہ اللہ علیہ نے زمین پر نگاہ ڈالی . زمین کا یہ قطعہ آپ رحمتہ اللہ علیہ کے قہر و جلال سے محفوظ تها .آپ رحمتہ اللہ علیہ کی نگاہ پڑی تو ایک نور ظاہر ہوا جو کہ آسمان تک بلند ہوگیا. آپ رحمتہ اللہ علیہ نے حضرت شمس الدین ترک پانی پتی رحمتہ اللہ علیہ کو مخاطب کرتے ہوئے فرمایا!

وہ غلام جسے کوئی خریدتا نہیں تھا ۔ مسلمانوں کا امام کیسے بنا؟ دل کو چھو جانے والا ایک خوبصورت واقعہ

وہ غلام جسے کوئی خریدتا نہیں تھا ۔ مسلمانوں کا امام کیسے بنا؟ دل کو چھو جانے والا ایک خوبصورت واقعہ

مدینہ کا بازار تھا ، گرمی کی شدت اتنی زیادہ تھی کہ لوگ نڈھال ہورہے تھے ۔ ایک تاجر اپنے ساتھ ایک غلام کو لیے پریشان کھڑا تھا ۔ غلام جو ابھی بچہ ہی تھا وہ بھی دھوپ میں کھڑ ا پسینہ پسینہ ہورہا تھا ۔ تاجر کا سارا مال اچھے داموں بک گیا تھا بس یہ غلام ہی باقی تھا جسے خریدنے میں کوئی بھی دلچسپی نہیں دکھا رہا تھا۔ تاجر سوچ رہا تھا کہ اس غلام کو خرید کر شاید اس نے گھاٹے کا سودا کیا ہے۔ اس نے تو سوچا تھا کہ اچھا منافع ملے گا لیکن یہاں تو اصل لاگت ملنا بھی دشوار ہورہا تھا۔ اس نے سوچ لیا تھا کہ اب اگر یہ غلام پوری قیمت پر بھی بکا تو وہ اسے فورا" بیچ دے گا۔

دعائیں رائیگاں نہیں جاتی

دعائیں رائیگاں نہیں جاتی

میں نے ان سے ایک سوال پوچھا ’’اللہ تعالیٰ سے بات منوانے کا بہترین طریقہ کیا ہے؟‘‘ وہ مسکرائے‘ قبلہ رو ہوئے‘ پاؤں لپیٹے‘ رانیں تہہ کیں‘ اپنے جسم کا سارا بوجھ رانوں پر شفٹ کیا اور مجھ سے پوچھا ’’تمہیں اللہ سے کیا چاہیے؟‘‘ ہم دونوں اس وقت جنگل میں بیٹھے تھے‘ حبس اور گرمی کا موسم تھا‘ سانس تک لینا مشکل تھا‘

یہود اور ان کے عقائد

یہود اور ان کے عقائد

یہودیت کی وجہ تسمیہ ان کا یہوداسے منسوب ہونا ہے جو حضرت یعقوبؑ چوتھے بیٹے تھے اور جن کی والدہ لائقہ تھیں۔ تورات اور تلمود کے تمام پیروکاروں کو آج یہودی کہا جاتا ہے چاہے وہ حضرت یعقوبؑ کی اولاد سے ہوں یا دیگر اقوام سے، انھوںنے پہلے یہودی مذہب قبول کیا ہو یا بعد میں۔ یہ بات قابل ذکرہے کہ اسرائیل حضرت یعقوبؑ کا ایک نام ہے جس کا معنی ہے” عبداللہ“ یا” اللہ کا بندہ“ ۔

افسوس ناک واقعہ: حضرت عمربن عبدالعزیزؒ کے مزار کی بے حرمتی

افسوس ناک واقعہ: حضرت عمربن عبدالعزیزؒ کے مزار کی بے حرمتی

ادلب (مانیٹرنگ ڈیسک): شامی صوبہ ادلب کے شمال مغربی علاقے میں موجود آٹھویں اموی خلیفہ حضرت عمر بن عبدالعزیزؒ کے مقدس مزار کو شرپسندوں نے شہید کردیا۔ پاکستانیوں سمیت پوری مسلم امہ کی جانب سے شدیدغم وغصے کا اظہار کیا گیا۔

قدس شریف ،عالم اسلام کا اہم حصہ

قدس شریف ،عالم اسلام کا اہم حصہ

تاریخی اہمیت بیت المقدس کو دنیا کے تاریخی ومذہبی شہروں میں ایک خاص اہمیت حاصل ہے ۔ اس شہر کی تاریخ ساڑھے تین ہزار سال پرانی ہے ۔ تمام ابراہیمی ادیان کے نزدیک اسے تقدس حاصل ہے ۔ تاریخ یعقوبی اور وسائل کی روایات کے مطابق حضرت یعقوبؑ مصر میں فوت ہوئے تو حضرت یوسفؑ اپنے بھائیوں کے ہمراہ ان کا جنازہ لے کر بیت المقدس پہنچے اور انہیں اپنے آباءکے پہلو میں دفن کیا۔ رسول اکرم مبعوث بہ رسالت ہوئے تو آپ نے اپنی دعوت کی بنیاد گزشتہ انبیاءکی تصدیق پر رکھی۔

جنات کی پیدائش کب، کیسے اور کیوں ہوئی؟ سب سے بڑے جن کا کیا نام ہے اور قرآن اس بارے میں کیا کہتا ہے تفصیل جانئے اس تحریر میں

جنات کی پیدائش کب، کیسے اور کیوں ہوئی؟ سب سے بڑے جن کا کیا نام ہے اور قرآن اس بارے میں کیا کہتا ہے تفصیل جانئے اس تحریر میں

ارشاد باری تعالیٰ ہے۔  ترجمہ: ’’بے شک ہم نے انسان کو بہترین انداز پر بنایا ہے۔ ‘‘ (سورۃ تین، آیت،۴) حضور اکرم ؐ کا ارشاد مبارک ہے۔

کیا آپ نے تاریخ کے اس سے دلیر ترین جاسوس کے بارے میں سن رکھا ہے؟

کیا آپ نے تاریخ کے اس سے دلیر ترین جاسوس کے بارے میں سن رکھا ہے؟

سیدنا سعد بن ابی وقاص رضی للہ عنہ نے 7 افراد لشکرفارس کے بارے میں معلومات اکٹھا کرنے کیلئے بھیجے اور انھیں حکم دیا کہ اگر ممکن ہو سکے تو اس لشکر کے ایک آدمی کو گرفتار کر کے لے آئیں!! . یہ ساتوں آدمی ابھی نکلے ہی تھے کہ اچانک انھوں نے دشمن کے لشکر کو سامنے پایا .. جبکہ ان کا گمان یہ تھا کہ لشکر ابھی دور ہے..

حضرت عمرؓ کی مچھلی کھانے کی خواہش

حضرت عمرؓ کی مچھلی کھانے کی خواہش

وہ اپنی غلطی کو غلطی سمجھتے تھے حضرت عمر رضی اللہ تعالی عنہ کبھی کوئی خواہش نہیں کی مچھلی کھانے کو دل چاہا تو آپ کے ایک غلام کا نام یرکا تھا۔ یرکا آپ کا بڑا وفادار غلام تھا ایک دن آپ نے کہا مچھلی کھانے کو دل کرتا ہے۔ لیکن مسئلہ یہ ہے آٹھ میل دور جانا پڑے گا مچھلی لینے۔ اورآٹھ میل آنا پڑے گا مچھلی لے کے۔ رہنے دو کھاتے ہی نہیں۔ ایک چھوٹی سی خواہش کیلئے اپنے آپ کو اتنی مشقت میں ڈالنا ۔

Loading…