وہ شرمناک ترین چیز بالآخر متعارف کروادی گئی جس کا دنیا بھر کے مَردوں کو انتظار تھا۔۔۔

2017 ,جنوری 28



نیویارک (مانیٹرنگ ڈیسک) انٹرنیٹ کے دور میں طرح طرح کی معلوماتی اور تفریحی ایپس ہماری زندگی کا حصہ بن چکی ہیں، تو یہ کیسے ممکن تھا کہ شیطان کے پیروکار پیچھے رہ جاتے اور کوئی فحش ایپ متعارف نہ کرواتے۔ یہ شرمناک کام ایک امریکی کمپنی نے کیا ہے، جس کے سربراہ میٹ میکملن کہتے ہیں کہ رئیل بوڈیز نامی ایپ صارفین کو ایک حقیقی انسانی محبوبہ جیسا لطف فراہم کرے گی۔ میٹ نے اخبار ڈیلی سٹارسے بات کرتے ہوئے بتایا کہ یہ ایپ مصنوعی ذہانت کی حامل ہے اور صارفین اس کے ساتھ بات چیت کرتے ہوئے بالکل نہیں بتاسکتے کہ دوسری طرف ایک کمپیوٹر ہے یا کوئی حقیقی انسان۔ انہوں نے بتایا کہ رئیل بوڈیز نہ صرف آپ کے الفاظ کو سمجھ سکے گی بلکہ آپ سے بات چیت کی صلاحیت بھی رکھتی ہوگی۔ اس کے ساتھ آپ کا تعلق کسی انسان کی طرح ہی آگے بڑھے گا اور یہ آپ کے مزاج اور پسند و ناپسند سے باخبر ہوکر آپ کو لطف فراہم کرنے کے طریقے ڈھونڈ نکالے گی میٹ نے بتایا کہ اینڈرائڈ ایپ کی تیاری پہلا مرحلہ ہے، اگلے مرحلے میں حقیقی لڑکیوں سے ملتے جلتے روبوٹ بنائے جائیں گے جن کے دماغ کے طور پر یہی ایپ استعمال ہوگی۔ اس جنسی روبوٹ کو 12مختلف قسم کی پرسنالٹی ٹائپس کے مطابق تیار کیا جائے گا۔ صارفین اپنی مرضی سے شوخ، نرم مزاج، دوستانہ، بھولی بھالی یا دانشور ٹائپ کی پرسنالٹی والی روبوٹ محبوبہ کا انتخاب کرسکیں گے۔ایپ رئیل بوڈیز کیلئے سالانہ سبسکرپشن 20 ڈالر (تقریباً 2000 پاکستانی روپے) ہوگی اور اس کے لئے رجسٹریشن کا آغاز 15 اپریل سے ویب سائٹ پر شروع کر دیا جائے گا۔

متعلقہ خبریں