نیا قانون، غلطی پر معافی شادی کی صورت میں

2016 ,دسمبر 8



 

لبنان (شفق ڈیسک) خواتین نے پارلیمنٹ میں زیر بحث مجوزہ قانون سازی کیخلاف احتجاج کیا ہے جس کیمطابق ریپ کرنیوالے شخص کو اس صورت میں معافی مل سکتی ہے، اگر وہ مذکورہ خاتون سے شادی کرلے۔ درجن بھر لبنانی خواتین نے بیروت میں حکومتی عمارت کے سامنے سفید کپڑوں میں جسم پر پٹیاں باندھ کر اپنا احتجاج رقم کروایا۔ اس موقع پر مقامی این جی او آباد کی سربراہ غدا انانی کا کہنا تھا کہ ہم خواتین کے حقوق کی پامالی کے اس مجوزہ قانون کو مسترد کرتے ہیں۔ اس قانون سازی کا مطلب یہ ہے کہ مذکورہ خاتون کا روزانہ کی بنیاد پر ریپ کرنیکی اجازت دیدی جائے کیوں کہ ایک ایسا شخص جس نے کسی خاتون کی عزت پامال کی ہو۔ اسے اسی شخص کیساتھ زندگی بھر رہنا ہوگا۔ واضح رہے کہ ترکی میں بھی رواں سال اسی طرح کی قانون سازی کی تجویز دی گئی تھی، جس پر ترک عوام نے بڑے پیمانے پر احتجاج کیا تھا۔

متعلقہ خبریں