خالہ کو نشہ آور گولیا کھلانے والا شخص گرفتار

2016 ,دسمبر 3



 

دبئی (شفق ڈیسک) بزرگوں کی خدمت کا جذبہ یقیناًلائق تحسین ہے لیکن ان کی ہر بات آنکھیں بند کرکے مان لینا کبھی کبھار بہت مہنگا پڑسکتا ہے۔ کچھ ایسا ہی افسوسناک معاملہ ایک 26 سالہ فلسطینی نوجوان کے ساتھ پیش آیا جو اپنی ایک خالہ کے کہنے پر دوسری خالہ کے لئے دوائی لے کر دبئی پہنچا لیکن ائرپورٹ پر ہی اسے دھرلیاگیا کیونکہ دراصل یہ دوائی نہیں بلکہ نشہ آور گولیاں تھیں۔ گلف نیوز کی رپورٹ کے مطابق یہ نوجوان ہنی مون کیلئے گیا تھا اور شام میں مقیم اس کی خالہ نے درخواست کی تھی کہ یہ واپس جاتا ہوا اپنی بیمار خالہ کیلئے کچھ ادویات لیتا جائے۔ بیچارے نوجوان نے شام والی خالہ کا دیا ہوا پیکٹ بغیر سوچے سمجھے اپنے سامان میں رکھ لیا لیکن دبئی انٹرنیشنل ائیرپورٹ پر پہنچا تو سکیورٹی اہلکاروں نے اسے گھیر لیا۔ اسے بتایا گیا کہ اس کے سامان میں سے ’’پریگا بالن‘‘ نامی ممنوعہ نشہ آور دوا کی 240 گولیاں برآمد ہوئی تھیں۔ یہ سنتے ہی نوبیاہتا نوجوان کے پاؤں تلے سے زمین نکل گئی اور اس نے فوری طور پر اپنی ابوظہبی والی خالہ کو فون کر کے بتایا کہ اس کیلئے لائی گئی ادویات نشہ آور گولیاں ثابت ہوئی ہیں لہٰذا وہ فوراً ائیرپورٹ پہنچے۔ بیمار خالہ نے بھی ہمت کا مظاہرہ کیا اور ائرپورٹ پہنچ گئی جہاں اس نے سکیورٹی اہلکاروں کو سمجھانے کی کوشش کی کہ وہ یہ گولیاں اپنے علاج کیلئے استعمال کررہی ہے۔ دوسری جانب سکیورٹی اہلکار ان باتوں پر یقین کرنے کو تیار نہ تھے لہٰذا نوجوان کو پولیس کے حوالے کردیا گیا۔ خالہ اور بھانجے کی تمام تر وضاحتوں کے باوجود کیس عدالت پہنچ گیا جہاں متعلقہ فریقین کے بیانات قلمبند کئے جا چکے ہیں۔ مقدمے کی سماعت جاری ہے اور فیصلہ عنقریب متوقع ہے۔

متعلقہ خبریں