حرم شریف کے بالکل سامنے مکہ ٹاور کا سب سے اوپر والا کمرہ کس کے لیے مخصوص ہے ؟ جان کر ہر زبان سبحان اللہ کہہ اٹھے گی

2017 ,جنوری 11



لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک):اس وقت پوری دنیا میں ہزاروں بلکہ شاید لاکھوں مساجد ہوں گی۔جن میں فرزندان اسلام روزانہ خالق کائنات کی عبادت کرتے ہیں۔ایک سے ایک خوبصورت اور حسین ترین مساجد جنہیں دیکھ کر دل خود بخود سبحان اللہ کہہ اٹھتا ہے اور رب ذوالجلال کی مدح سرائی کرنے کو دل چاہتا ہے جس نے انسان کو اس قدر اعلیٰ صلاحیتوں سے نوازا کہ خود انسان بھی حیرت زدہ رہ گیا۔قارئین کی دلچسپی کو مدِ نظر رکھتے ہوئے انہیں ایک ایسی جگہ کے بارے میں بتاتے ہیں جو شاید ہی کیسی کو معلوم ہو۔ فرزندان اسلام کے مقدس ترین مقام بیت اللہ کے عین سامنے ملکہ کلاک ٹاور کی عظیم الشان عمارت واقع ہے جو 2013ءمیں اپنے افتتاح کے موقع پر دنیا کی دوسری بلند ترین عمارت تھی۔اس عمارت کی چوٹی زمین سے  607میٹر بلند ی پر واقع ہے اور بلند ترین مقام پر ایک خوبصورت سنہرا ہلال بنایا گیا ہے جس کی چمک میلوں دور سے آنکھوں کو خیرہ کرتی ہے۔چوٹی کے عین نیچے ،سنہری ہلال کی بنیاد میں ایک خاص کمرہ بنایا گیا ہے جسے کائنات کے خالق کی عبادت کے لیے وقف کیا گیا ہے۔رپورٹس بتاتی ہیں کہ یہ دنیا کا بلند ترین عبادت خانہ ہے۔نماز کے لیے بنائے گئے اس کمرے تک پہنچنے کے لیے ہائی سپیڈ لفٹ استعمال کرنا پڑتی ہو جو عمارت کے ٹاپ فلور تک جاتی ہے ۔اس کے بعد 18میٹر کا فاصلہ پیدل طے کیا جا سکتا ہے یا اس کے لیے دنیا کی بلند ترین چئیر لفٹ استعمال کی جاسکتی ہے۔عمارت کی تعمیر کے لیے کام کرنے والے انجینئروں کا کہنا ہے کہ اس کی منصوبہ بندی کرنے والے چاہتے تھے کہ کعبتہ اللہ کا پاکیزہ اور روح پرور نظارے کے ساتھ نماز کی ادائیگی کے لیے جگہ تعمیر کی جائے جس کی تکمیل کے لیے بلند ترین مقام پر واقع ہلال کے اندر یہ خاص کمرہ تعمیر کیا گیا جہاں مسلمان باری تعالیٰ کی عظمتوں کا اعتراف کرتے ہیں اور اس کے سامنے سر بسجود ہوتے ہیں۔
 

متعلقہ خبریں