جنرل باجوہ نے جو بویا کاٹنا شروع کر دیا

2022 ,نومبر 30



کسی نے سوچا بھی نہیں تھا کہ مکافات عمل اتنا جلدی سے شروع ہو جائے گا۔آج جنرل باجوہ کی ریٹائرمنٹ کا پہلا روز ہے۔ ان کا کتنا کروفر تھا۔ اپنے خلاف بولنے والوں کو فائرنگ سکواڈ کے سامنے کھڑا کر دیتے تھے۔ گرفتار کراتے تشدد کرایا جاتا ننگا کر دیا جاتا۔

جنرل باجوہ کو تنقیدی خط لکھنے والے کمپیوٹر انجینیئر کو فوجی افسران کو بغاوت  پر اکسانے کے جرم میں پانچ برس قید - BBC News اردو

عمران خان پر قاتلانہ حملہ کرا دیا۔ وہ ریٹائر ہوئے تو ان کے خلاف ٹوئٹر پر غدار باجوہ کا ٹرینڈ چل رہا ہے۔ اب کوئی ایکشن نہیں ہو رہا۔

عمران خان نے جنرل ساحر اور جنرل عاصم کو مبارکباد میں قائداعظم کے خطاب کی  غلط تاریخ لکھ دی

صابر شاکر نے ٹویٹ میں کہا دفع ہونے والے کے بارے میں ایک فقرہ ہے کہیں۔ مسرت جمشید چیمہ کہتی ہیں لوگوں نے اس کے جانے پر یوم نجات یوم دفعان اور یوم تشکر منایا۔ انسان اپنا تحفظ خود ہوتا ہے۔ اپنی عزت اپنے ہاتھ میں ہوتی ہے۔

صابر شاکر نے ARY چھوڑ دیا

مسرت جمشید چیمہ کو تحریک انصاف میں بڑی ذمہ داری مل گئی لاہور کا صدر کسے  بنایا گیا ؟جانئے

جنرل راحیل شریف بھی کل29نومبر کی اس پیریڈ میں موجود تھے جس میں باجوہ نے عاصم منیر کو روایتی چھڑی تھمائی۔ راحیل شریف کو لوگ سلام کر رہے تھے۔

جنرل راحیل شریف۔۔ پاکستان کا روشن ستارہ

جنرل کیانی بھی آئے ان سے لوگ لاتعلق رہے۔ جنرل باجوہ تین سال بعد ایسی ہی تقریب میں آئیں گے تو کیا کاٹیں گے؟ وہی جو انہوں نے ظلم جبر بربریت نا انصافی نفرت اور لوگوں کو ذلیل کرنے کی فصل بوئی تھی۔

جنرل کیانی کا 'پیغام واضح تھا': تجزیہ کار

متعلقہ خبریں