ڈاکٹر حیدر عسکری کو قتل کرنے والا کون نکلا؟ سی سی ٹی وی فوٹیج سامنے آتے ہی کراچی میں ہلچل مچل گئی

2019 ,اگست 31



کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک): کراچی کے علاقے گلشن اقبال میں ڈاکٹر کے قتل کی سی سی ٹی وی ویڈیو جیو نیوز کو موصول ہوگئی، مقتول کو موٹرسائیکل سوار ملزمان نے نشانہ بنایا۔کراچی کی علاقے گلشن اقبال کے ڈی اے مارکیٹ کے قریب ڈاکٹر حیدر عسکری کو قتل کرنے کی سی سی ٹی وی جیونیوز کو موصول ہو گئی ہے، واردات میں دو دہشت گرد شامل ہیں۔ملزمان موٹرسائیکل پر سوار تھے، ڈاکٹر عسکری گھر سے جب نکلے تو گھر کے قریب موجود ملزمان نے ان کی کار روکنے کی کوشش کی۔ڈاکٹر عسکری نے کار نہیں روکی اور آگے جانے کی کوشش کی تو ایک ملزم نے پیچھے سے فائر کردیا۔ سی سی ٹی وی میں ملزمان اطمینان سے کارروائی کرنے کے بعد فرار ہوتے دیکھے جاسکتے ہیں۔تفتیشی ذرائع بتاتے ہیں کہ موقع سے 30 بور پستول کا ایک خول ملا جو فرانزک کرلیا گیا ہے، یہ ہتھیار ماضی میں کبھی استعمال نہیں کیا گیا۔ٹارگٹ کلنگ کا مقدمہ گلشن اقبال تھانے میں درج کیا گیا ہے، مقدمہ انسداد دہشتگردی اور قتل سمیت دیگر دفعات کے تحت درج ہے۔پولیس کے مطابق مقتول سندھ گورنمنٹ اسپتال کورنگی میں ماہر امراض قلب تھے۔واضح رہے کہ کراچی کے علاقے گلشن اقبال میں ڈاکٹر حیدر عسکری کے قتل کا مقدمہ نامعلوم ملزمان کے خلاف دہشت گردی اور دیگر دفعات کے تحت درج کر لیا گیا ہے۔کراچی کے علاقے گلشن اقبال میں کے ڈی اے مارکیٹ کے قریب ہارٹ سرجن ڈاکٹر حیدر عسکری گھر سے نکلے تو موٹر سائیکل سوار ملزمان کی جانب سے انہیں فائرنگ کا نشانہ بناتے ہوئے کار روکنے کی کوشش کی، ڈاکٹر عسکری نے کار نہ روکی اور آگے جانے کی کوشش کی تو ایک ملزم نے پیچھے سے فائر کردیا جس کے نتیجے میں ڈاکٹر حیدر جاں بحق ہو گئے۔سی سی ٹی وی ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ ملزمان اطمینان سے کارروائی کرنے کے بعد فرار ہو گئے۔تفتیشی ذرائع کا کہنا ہے کہ موقع سے ملنے والے گولی کے خول کے فارنزک جائزے سے پتا چلتا ہے کہ اسلحہ پہلے کسی واردات میں استعمال نہیں ہوا۔مقتول سندھ گورنمنٹ اسپتال کورنگی میں ماہر امراض قلب تھے۔واضح رہے کہ کراچی میں ٹارگٹ کلنگ کے واقعات میں تیزی آئی ہے، اس سے قبل 26 اگست کو بھی گلستان جوہر میں ڈاکوؤں کی فائرنگ سے پولیس افسر کی سالی ڈاکٹر عائشہ جاں بحق ہوگئی تھی جو کینڈا سے شادی میں شرکت کے لئے کراچی آئی تھی۔

متعلقہ خبریں