مودی نے کشکول پکڑ لیا ۔۔۔ بھارت سے ایسی خبر آگئی کہ پوری دنیا میں منہ دکھانے کے قابل بھی نہ رہے

2019 ,جنوری 28



نئی دہلی (مانیٹرنگ ڈیسک) سماجی رابطوں کی ویب سائٹ فیس بک پر بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کی کشکول ہاتھ میں لیے تصویر پوسٹ کرنے پر ایک سیاستدان کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔ تامل جماعت کے رہنما ستھیاراج بالو نے تصویر ایڈیٹنگ کرکے مودی کے ہاتھ میں کشکول تھما دیا۔  تامل ناڈو میں وزیراعظم نریندر مودی کے دورے سے ایک رورز قبل مقامی تامل جماعت کے رہنما ستھیا راج بالو نے مودی کی تصویر میں ایڈیٹنگ کر کے انہیں کشکول ہاتھ میں لیے دکھا کر بھیک مانگنے سے تعبیر کیا۔ اس تصویر کو سوشل میڈیا پر پوسٹ کیا تو انہیں ہفتے کے روز گرفتار کر لیا گیا۔ حکمران جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی کی جانب سے باقاعدہ شکایت کے بعد انہیں گرفتار کر کے امن عامہ کو خراب کرنے اور سماج میں طبقاتی فرق پیدا کرنے کا ذمے دار ٹھہرایا گیا ہے۔ سینئر پولیس افسر نے بتایا کہ ہمیں ستھیاراج بالو کے خلاف شکایت موصول ہوئی تھی جس کے نتیجے میں قانون کے مطابق کارروائی کی گئی۔ اس وقت ستھیاراج بالو پولیس کی حراست میں ہیں جہاں ان سے تفتیش جاری ہے لیکن ناقدین نے حکومت کے اس اقدام کی شدید مذمت کرتے ہوئے اسے آزادی اظہار رائے کا قتل قرار دیا ہے۔ یہ پہلا موقع نہیں کہ حکومت یا اس کی پالیسیوں کو تنقید کا نشانہ بنانے والوں کے خلاف مودی حکومت نے کارروائی کی ہو بلکہ گزشتہ سال بھی اسی جرم میں درجنوں افراد کو حراست میں لیا گیا تھا۔

متعلقہ خبریں