میں نے صبح اٹھ کر جب موبائل دیکھا تو ۔۔۔ وزیراعظم عمران خان نے ظہرانے سے خطاب کے دوران ایسی بات کہہ دی کہ محمد بن سلمان بھی خوشی سے نہال ہوگئے

2019 ,فروری 18



لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) پورے ملک میں سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کے آنے کی خوشی ہے جبکہ وزیراعظم عمران خان نے سعودی ولی عہد کے ساتھ مشترکہ کانفرنس میں کہا کہ جب میں نے صبح اٹھ کر موبائل دیکھا تو مجھے یہ محسوس ہوا کہ کل کے بیانات کے بعد سعودی ولی عہد کو پاکستان میں بہت بھاری ووٹ مل سکتے ہیں۔  وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ سعودی ولی عہد پاکستانیوں کے دلوں پر چھاگئے ہیں اور میں ان کا پاکستان آنے پر تہہ دل سے شکریہ ادا کرتا ہوں۔ انہوں نے مزید کہا کہ میں ان کا احسان کبھی نہیں بھول سکتا جو انہوں نے اپنا وعدہ پورا کردیا اور 2107 قیدیوں کو سعودی جیل سے رہا کردیا۔ سعودی ولی عہد محمد بن سلمان نے وزیراعظم عمران خان سے کیا گیا وعدہ چند گھنٹوں میں پورا کرتے ہوئے سعودی جیلوں میں قید 2107 پاکستانیوں کو فوری رہاکرنے کا حکم جاری کر دیاہے ۔ تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان اور سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کے درمیان ملاقات ناشتے پر ہوئی جس دوران انہوں نے یہ خوشخبری سنا دی ہے ۔ دوسری جانب وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے ٹویٹر پر صبح سویرے خوشخبری سناتے ہوئے ٹویٹر پر اعلان کیا کہ ” وزیراعظم عمران خان کی درخواست پر ولی عہد محمد بن سلمان نے فوری طور پر سعودی جیلوں میں قید 2017 پاکستانیوں کو رہا کرنے کا حکم جاری کر دیا ہے ۔ سعودی ولی عہد محمدبن سلمان کی جانب سے دیا جانے والا پاکستان کو یہ سب سے بڑا تحفہ تصور کیا جارہاہے جس کی اس دنیا میں کوئی قیمت نہیں لگا سکتا ہے ۔ یاد رہے کہ گزشتہ شب عشائیے کے دوران وزیراعظم عمران خان نے سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ 3 ہزار پاکستانی سعودی عرب کی جیلوں میں قید ہیں، ولی عہد سے درخواست ہے کہ اس مسئلے کو اپنی سطح پر دیکھیں اور اگر پاکستانی قیدیوں کے لیے کچھ کرسکیں تو اللہ آپ سے خوش ہوگا۔ جواب میں سعودی ولی عہد نے عمران خان کو ہر ممکن تعاون کی یقین دہانی کرائی اور کہا کہ وہ پاکستان کی بات رد نہیں کرسکتے آپ مجھے پاکستان کا سفیر سمجھیں، مجھ سے پاکستانی قیدیوں کے لیے جو ہوسکا کروں گا۔

متعلقہ خبریں