لاش صحن میں برہنہ ملی،سر پر زخم اوم پوری کو قتل کیا گیا

2017 ,جنوری 7



ممبئی(مانیٹرنگ)بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق اداکار اوم پوری کی لاش گھر کے کچن کے قریب برہنہ حالت میں ملی تھی اور  پوسٹ مارٹم  میں ان کے سر پرڈیڑھ انچ گہرے زخم کا نشان اورسرمیں جگہ جگہ بلڈ کلاٹنگ پائی گئی ہے جس نے ان کی موت پر کئی قسم کے سوالوں کو جنم دے دیا ہے جب کہ موت سے ایک رات قبل اوم پوری ہدایت کار خالد قدوائی کے ہمراہ تھے جنہوں نے اداکار کی ان کی سابقہ اہلیہ نندتا پوری  سے لڑائی کا انکشاف کیا تھا تاہم  نندتا نے بالی ووڈ ہدایت کار خالد قدوائی اور اوم پوری کے ڈرائیورمشرا کو ان کی موت کا ذمہ دار ٹھہرایا ہے۔

پوسٹ مارٹم رپورٹ  اور سابقہ اہلیہ کے الزام  کے بعد پولیس نے لیجنڈری اداکار اوم پوری کی موت کی تحقیقات کا آغاز کردیا ہے اور ہدایت کارخالد قدوائی سے 2 گھنٹے تک تھانے میں تفتیش بھی کی جب کہ  پولیس نے اداکار کے ڈرائیور سمیت آخری روز ان سے ملنے والے تمام افراد کو شامل تفتیش کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ اوم پوری کے بیوی نندتا اور بیٹے ایشان کو بھی شامل تفتیش کیا جائے گا۔

واضح رہے کہ  گزشتہ روز اداکار اوم پوری اپنے فلیٹ میں مردہ حالت میں پائے گئے تھے جن کی موت کا سبب ہارٹ اٹیک قرار دیاتھا۔

دریں اثنا اوم پوری انتقال سے قبل بھی بھارتی معاشرے کے سیاہ چہرے سے اپنی اداکاری کے ذریعے پردہ چاک کرنے کی کوششوں میں مصروف رہے اور دلت خواتین کے ساتھ ظلم وستم اور جنسی زیادتی  کے واقعات پر مبنی فلم ’’رام بھجن زندہ باد‘‘ میں اداکاری کے جوہر دکھائے جب کہ فلم کو اگلے ماہ نمائش کے لیے پیش کیا جانا تھا  اور اس کی تشہیر کے لیے کل ہی انہوں نے سلمان خان سے ان کے مقبول رئیلٹی شو’’بگ باس‘‘ سیزن 10 میں شرکت کی خواہش کا اظہار کیا جس پر سلو میاں نے فوراً حامی بھرتے ہوئے جلد ہی شو میں بلانے کی یقین دہانی کرائی لیکن زندگی نے لیجنڈری اداکار سے وفا نہ کی۔

متعلقہ خبریں