آئندہ دو ماہ میں پاکستان میں دھند، کیا ہوسکتا ہے؟

2016 ,نومبر 5



اسلام آباد (شفق ڈیسک) ڈائریکٹر محکمہ موسمیات ڈاکٹر حنیف نے کہا ہے کہ آئندہ دو ماہ کی دوران پاکستان میں سموگ کی شدت میں مزید اضافہ ہو گا۔ سموگ سے انسانی صحت کو شدید خطرات لاحق ہو گئے ہیں جبکہ گندم کی فصل کو بھی نقصان پہنچ سکتا ہے۔ تفصیلات کیمطابق ڈائریکٹر محکمہ موسمیات ڈاکٹر حنیف نے بتایا کہ جب بادل زمین پر آجائیں تو اسکو دھند کہتے ہیں جب دھند میں فضائی آلودگی (گردو غبار اور دھواں) شامل ہو جائے تو اسکو سموگ کا نام دیا جاتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بارشوں کے نہ ہونیکے باعث آئندہ دو ماہ کے دوران پاکستان خصوصاً پنجاب میں سموگ کی شدت میں مزید اضافہ ہونیکا امکان ہے۔ سموگ بڑھنے سے انسانوں سمیت جانوروں کی صحت کو شدید خطرات لاحق ہو چکے ہیں۔ سموگ کی وجہ سے گندم کی فصل شدید متاثر ہو سکتی ہے۔ طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ سموگ کی وجہ سے انسانی صحت شدید متاثر ہو رہی ہے۔ سموگ کے باعث نزلہ، زکام، سائنس کی بیماری اور جسمانی الرجی میں اضافہ ہوا ہے۔ طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ گھر سے نکلتے وقت منہ پر ماسک لگانا چاہیئے رات کو سوتے اور صبح اٹھ کر نیم گرم پانی کے غرارے کرنے چاہئیں اور چکنائی والی اشیاء سے پرہیز کیا جائے۔

متعلقہ خبریں