قائداعظمؒ کے جانثار ساتھی اور تحریک پاکستان کے سرگرم کارکن کرنل(ر) امجد حسین سید کے صد سالہ یوم ولادت پر مقررین کا بھرپور خراج عقیدت

2022 ,دسمبر 14



قوم پر اپنے ہیروز کو یاد رکھنا لازم ہے۔قائداعظمؒ کے جانثار ساتھی اور تحریک پاکستان کے سرگرم کارکن کرنل(ر) امجد حسین سید کے صد سالہ یوم ولادت پر مقررین کا بھرپور خراج عقیدت۔ سینیٹر مشاہد حسین سید کو نظریۂ پاکستان ٹرسٹ کا وائس چیئرمین منتخب ہونے پر مبارکباد

No description available.
لاہور: کرنل(ر) امجد حسین سید اول وآخرپاکستانی تھے۔ انہوں نے نہ صرف تحریک پاکستان میں سرگرم کردار ادا کیا بلکہ قیام پاکستان کے بعد علامہ محمد اقبالؒ اور قائداعظم محمد علی جناحؒ کے افکار و نظریات کے مطابق اس مملکت کی تعمیروترقی کیلئے خود کو وقف کئے رکھا۔کرنل(ر) امجد حسین سید عاشق رسولؐ، عاشق قائد اعظمؒ اور عاشق علامہ اقبالؒ تھے۔ ان کا اوڑھنا بچھونا پاکستان تھا اور وہ وطن عزیز کیخلاف کوئی بات سننا گوارا نہیں کرتے تھے۔انہوں نے ہمیشہ کلمۂ حق کہنے کا درس دیا ۔ انہوں نے اپنی زندگی نظریۂ پاکستان کی ترویج واشاعت کیلئے وقف کر رکھی تھی۔

No description available.

وہ اس مملکت خداداد کو بانیان پاکستان کی امنگوں اور آرزوئوں کے مطابق جدید اسلامی‘ جمہوری اور فلاحی ریاست کے قالب میں ڈھالنے کیلئے جہد مسلسل کرتے رہے۔ اس مادیت پرست دور میں وہ ایک صوفیانہ مزاج کی حامل شخصیت تھے اور کبھی دولت کی طلب نہ کی۔ وہ حقیقی معنوں میں قوم کے ہیرو تھے۔ ان خیالات کااظہار مقررین نے ‘ رہنما مسلم سٹوڈنٹس فیڈریشن اور آل انڈیا مسلم لیگ کے تاریخی اجلاس 1937ء ( لکھنؤ) اور 1940ء (لاہور) میں شرکت کا اعزاز حاصل کرنیوالے کرنل (ر) امجد حسین سید کے صد سالہ یوم ولادت کے موقع پرایوان کارکنان تحریک پاکستان ،لاہور میں منعقدہ خصوصی تقریب کے دوران کیا۔

No description available.

اس تقریب کا اہتمام نظریۂ پاکستان ٹرسٹ نے تحریک پاکستان ورکرز ٹرسٹ کے اشتراک سے کیا تھا۔ اس موقع پرسابق چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ و چیئرمین نظریۂ پاکستان ٹرسٹ شیخ اعجاز نثار‘ کرنل(ر) امجد حسین کے صاحبزادگان سینیٹر مشاہد حسین سید، مجاہد حسین سیداور صاحبزادی تحسین سید، سینئر وائس چیئرمین نظریۂ پاکستان ٹرسٹ میاں فاروق الطاف‘ سینئر صحافی و دانشور مجیب الرحمن شامی‘ ممتاز سیاسی و سماجی رہنما بیگم مہناز رفیع‘ گولڈ میڈلسٹ کارکن تحریک پاکستان کرنل(ر) محمد سلیم ملک‘ سابق نگران وزیراعلیٰ پنجاب حسن عسکری‘ پروفیسر ڈاکٹر مجاہد منصوری‘ ڈائریکٹر جنرل یونیورسٹی آف مینجمنٹ اینڈ ٹیکنالوجی پروفیسر عابد شیروانی‘ پروفیسر ڈاکٹر شفیق جالندھری‘ چوہدری جاوید الٰہی‘ سیاسی رہنما رانا محمد ارشدضیاء رضوی ‘ ڈائریکٹر مجلس ترقی ادب اصغر عبداللہ‘ پروفیسر ڈاکٹر پروین خان‘ بیگم خالدہ جمیل‘ بیگم صفیہ اسحاق‘ راجہ اسد علی خان‘ ذوالفقار راحت‘ پیر محمد جمیل شاہ‘ نظریۂ پاکستان ٹرسٹ کے سیکرٹری ناہید عمران گل اور کرنل(ر) امجد حسین کے عزیزو اقارب سمیت مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے خواتین وحضرات کثیر تعداد میں موجود تھے۔پروگرام کاآغازحسب معمول تلاوت کلام پاک‘نعت رسول مقبولؐ اور قومی ترانہ سے ہوا ۔قاری خالد محمود نے تلاوت کلام پاک کی سعادت حاصل کی جبکہ معروف نعت خواںالحاج اختر حسین قریشی نے بارگاہ رسالت مابؐ میں نذرانۂ عقیدت پیش کیا۔پروگرام کی نظامت کے فرائض سیکرٹری تحریک پاکستان ورکرز ٹرسٹ محمد سیف اللہ نے انجام دیے۔

No description available.
     چیف جسٹس(ر) اعجاز نثار نے کہا کہ تحریک پاکستان کے نامور کارکن کرنل امجد حسین سید ایک باکمال انسان تھے جن سے ملنے والے پاکستان کے تابناک مستقبل کے بارے میں پُرامید ہو جاتے تھے۔ ان کے صدسالہ یوم ولادت کی تقریب کے انعقاد پر میں ان کے فرزند سینیٹر مشاہد حسین سید کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں جو اپنے عظیم والد کے مشن کو جوش و جذبے سے آگے بڑھا رہے ہیں۔ کرنل امجد حسین سید نے طالبعلمی کے زمانے میں مسلم سٹوڈنٹس فیڈریشن کے پلیٹ فارم سے تحریک آزادی میں بھرپور حصہ لیا۔ علامہ اقبالؒ نے انہیں 1937ء میں لکھنؤ میں منعقد ہونیوالے آل انڈیا مسلم لیگ کے تاریخی اجلاس میں مسلم سٹوڈنٹس فیڈریشن کی نمائندگی کیلئے نامزد کیا۔ کرنل امجد حسین سید میں حب الوطنی کوٹ کوٹ کر بھری ہوئی تھی۔ اسی لیے پاک فوج میں شمولیت اختیار کی۔ذاتی زندگی میں وہ ایک رحم دل اور شفیق انسان تھے جنہوں نے اپنی اولاد کی اعلیٰ اقدار کے مطابق تربیت کی۔ وہ ہر وقت حوصلے بڑھانے والی گفتگو کرتے۔

No description available.
    میاں فاروق الطاف نے کہا میں خود کو اس لحاظ سے بہت خوش نصیب تصور کرتا ہوں کہ مجھے قائداعظم محمد علی جناحؒ کے جانثار سپاہی کرنل امجد حسین سید سے شرف نیازحاصل کرنے کا موقع ملا۔ وہ ایک انتہائی ملنسار‘ شفیق اور شفیق اور محبت بھرے انسان تھے ۔جب وہ اسلامیہ کالج لاہور کے طالب علم تھے تو علامہ محمد اقبالؒ کی ہدایت پر اپنے دیگر ساتھیوں کے ساتھ مسلم سٹوڈنٹس فیڈریشن پنجاب کی بنیاد رکھی اور تحریک پاکستان میںنوجوانوں کو متحرک کرنے میںسرگرم کردار ادا کیا۔ قیام پاکستان کے وقت مہاجرین کی آباد کاری کیلئے بھی خدمات سرانجام دیں۔ قیام پاکستان اور تعمیر پاکستان کے لیے ان کی کاوشوں کو کبھی فراموش نہیں کیا جا سکتا۔ 

No description available.
    سینیٹ کی دفاعی کمیٹی کے چیئرمین اور نظریۂ پاکستان ٹرسٹ کے وائس چیئرمین سینیٹر مشاہد حسین سید نے کہا آزاد وطن کے حصول کیلئے ہمارے آباواجداد نے جان ومال کی بڑی قربانیاں دیں۔ پاکستان کو قائداعظمؒ کے وژن کے مطابق عظیم سے عظیم تر بنانے کی جدوجہد جاری رکھیں گے۔ نظریۂ پاکستان ٹرسٹ کے مقدس مشن میں آپ ہمارا ساتھ دیں۔ مشاہیر تحریک پاکستان کی بدولت ہی آج ہم آزاد فضائوں میں سانس لے رہے ہیں۔ میرے والد مرحوم کرنل(ر) امجد حسین سیدعاشق رسولؐ ،عاشق قائداعظمؒ اور عاشق علامہ محمد اقبالؒ تھے۔ وہ اپنے ایمان میں پختہ اور اللہ کی ذات پر کامل یقین رکھتے تھے ۔وہ ہمیں تحریک پاکستان اور نظریۂ پاکستان کے بارے میں بتاتے رہتے تھے۔ان کا نظریہ تھا کہ دولت کی کوئی حیثیت نہیں اصل چیز کردار ہے۔انہوں نے ہماری بہترین تعلیم وتربیت کی اور ہمیں قائداعظمؒ کے فرمودات پر عمل کرنے، رزق حلال کمانے اور ہمیشہ کلمۂ حق کہنے کا درس دیا۔وہ اصول پسند انسان تھے۔ انہوں نے کہا کہ قائداعظمؒ کا وژن بہت عظیم تھا،انہوں نے اپنے کردار، قوت ایمانی اور عوام کی تائید سے پاکستان بنا دیا۔پاکستان ایک نعمت ہے اور ہمیں اس کی قدر کرنی چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ نظریۂ پاکستان ٹرسٹ پوری قوم کا ادارہ ہے۔ 

No description available.
    تحسین سید نے کہا کہ میرے والد مرحوم کے دل و دماغ میں نبی کریمؐ کی محبت کوٹ کوٹ کر بھری ہوئی تھی۔ انہیں اپنے مذہب اور اپنے وطن پاکستان سے والہانہ لگائو تھا۔ قائداعظمؒ اور علامہ محمد اقبالؒ کی ذات سے انہیں عشق تھا ۔ انہوں نے ہمیں اللہ کی ذات پر کامل یقین رکھنے کا ہمیشہ درس دیا۔ ان کے قول وفعل میں کوئی تضاد نہیں تھا۔ میرے والد نے اس دور میں مجھے بیرون ملک اعلیٰ تعلیم کیلئے بھیجا جب لڑکیوں کا باہر نکلنا معیوب سمجھتا تھا۔ میرے والد نے لوگوں کی مخالفت مول لیکر اور اپنی جائیداد بیچ کر مجھے اعلیٰ تعلیم دلوائی۔
    چودھری جاوید الٰہی نے کہا کہ میرا کرنل(ر) امجد حسین سید کا بچپن‘ جوانی‘ تعلیمی سفر ، آرمی میں جانا ، انقلابی ذہن ،تحریک پاکستان میں ان کا شاندار کردار سب کچھ متاثر کن اور قابل تقلید تھا۔ ان سے میرا تعلق بہت پرانا ہے‘ میں انہیں اپنا روحانی باپ تصور کرتا ہوں۔ کرنل صاحب سے میرا پرخلوص رشتہ میری زندگی کا بہت بڑا سرمایہ ہے۔ انہوں نے بہت مشکل دور دیکھا۔ قدرت نے ان کے لئے صحیح راستے کا تعین کردیا تھا اور وہ تمام زندگی اسی پر گامزن رہے۔ کرنل(ر) امجد حسین سید نے اپنی اولاد کی عمدہ خطوط پر تربیت کی ۔ وہ کبھی بھی اولاد کی تربیت سے غافل نہیں ہوئے۔ اُنہوں نے بچوں کو بہت محبت دی اور رزق حلال کمانے اور ہمیشہ حق کے ساتھ کھڑے ہونے کا درس دیا۔ میں ان کے بہت قریب رہا ہوں اور مجھے ان کی شخصیت میں کبھی جھول نظر نہیں آیا۔ زندگی میں ان کے مقاصد بہت بلند تھے۔ ان کی نیت اور اندر سے دل بے حد صاف شفاف تھا۔ میں نے ان سے بہت کچھ سیکھا۔ ان کی شخصیت‘ کارناموں اور طویل العمری کو دیکھ کر احساس ہوتا تھا کہ آدمی زندگی میں کبھی ریٹائر نہیں ہوتا۔ وہ شخص قسمت تھے کہ اُنہوں نے شاندار زندگی بسر کی۔ وہ آخری سانس تک پاکستان سے محبت کا درس دیتے رہے۔

No description available.
    ناہید عمران گل نے کہاکہ کرنل امجد حسین سید نے بحیثیت طالبعلم تحریک پاکستان میں سرگرم کردار ادا کیا۔ انہیں علامہ محمد اقبالؒ اور قائداعظم محمد علی جناحؒ سے بارہا شرفِ ملاقات حاصل رہا۔ وہ سر تا پا پاکستان کی محبت میںسرشار تھے۔ نظریۂ پاکستان سے ان کی وابستگی کا یہ عالم تھا کہ ضعیف العمری میں بھی وہ باقاعدگی کے ساتھ نظریۂ پاکستان ٹرسٹ کی تقریبات میں شریک ہوتے تھے۔
    محمد سیف اﷲ نے کہا کہ کرنل امجد حسین سید کو قیام پاکستان کے بعد سینکڑوں ایسی تقاریب کی صدارت ملی جن میں قائداعظمؒ، علامہ اقبالؒ اور مشاہیر تحریک پاکستان کو خراج تحسین پیش کیا جا تا تھا آپ اپنے صدارتی خطاب آغاز اور اختتام برصغیر کے عظیم مسلمان شعراء مولانا ظفر علی خان اور علامہ اقبال کے اشعار سے کرتے تھے۔
     پروگرام کے دوران فراست علی بخاری نے کرنل(ر) امجد حسین سید کو منظوم خراج عقیدت پیش کیا۔مدینہ منورہ میں مقیم نظریۂ پاکستان فورم مشرق وسطیٰ کے صدر ڈاکٹر خالد عباس الاسدی کا منظوم خراج عقیدت کی فریم تصویر مجاہد مشاہد حسین سید کو پیش کی گئی۔

No description available.

متعلقہ خبریں