بھارتی انجینئرنگ اسٹوڈنٹ کا حیرت انگیز کارنامہ

2017 ,جنوری 24



 

ممبئی(مانیٹرنگ ڈیسک):  بھارت نے پہلا انسان نما روبوٹ تیار کر لیا۔ بھارت کے انجینئرنگ اسٹوڈنٹ کے عزم سے شروع ہونے والا تجربہ بھارت کی سب سے بڑی روبوٹ کمپنی کی بنیاد بن گیا، بھارت کی روبوٹک کمپنی گرے اورنج اربوں ڈالر کی سرمایہ کاری کا منبع بن چکی ہے۔وہاں کوئی بھی عام انسان انٹری کا سوچ بھی نہیں سکتا ۔لیکن  بھارتی طالبعلم انسان نما روبوٹ اس کمپنی میں بنانا چاہتا تھا، استاد کی جانب سے ایسا تجربہ ناممکن قرار دینے کے باوجود سمے کوہلی نے امید نہیں چھوڑی، اور اپنی محنت جاری رکھی۔اپنے ساتھی طالبعلم کی مدد سے وہ اپنا خواب پورا کرنے میں کامیاب ہو گئے انہوں نے نہ صرف بھارت کا پہلا انسان نما روبوٹ بنایا بلکہ بھارت کی سب سے بڑی روبوٹک کمپنی بھی بناڈالی۔سمے کوہلی کی کوششوں سے شروع ہونے والی روبوٹک کمپنی میں دنیا کی بہترین کمپنیاں سرمایہ کاری کرنے میں دلچسپی لے رہی ہیں ۔ اور ان کی کمپنی ترقی کے منازل بہت جلدی طے کر رہی ہے۔

متعلقہ خبریں